سی آئی اے امریکیوں کی جاسوسی میں ملوث

سی آئی اے کا لوگو
Spread the love

سی آئی اے خفیہ طور پر امریکیوں کا ڈیٹا اکٹھا کرنے میں مشغول نکلی،،، امریکی سینیٹرز نے خفیہ ایجنسی کی اپنے ہی شہریوں کے خلاف مہم کا بھانڈا پھوڑ دیا

رون وائڈن، اور مارٹن ہنریک نے خط میں کہا کہ یہ پروگرام نگرانی کے لئے مقرر کردہ حدود سے متجاوز ہے۔

سینیٹ کی انٹیلی جنس کمیٹی کے دو ڈیموکریٹک ممبران نے کہا کہ سی آئی اے کے پاس خفیہ، غیر ظاہر شدہ ڈیٹا کا ذخیرہ ہے جس میں امریکیوں کے بارے میں جمع کی گئی معلومات شامل ہیں۔ گو نہ تو ایجنسی اور نہ ہی قانون ساز ڈیٹا کے بارے میں تفصیلات ظاہر کریں گے۔

 انہوں نے الزام لگایا کہ سی آئی اے نے طویل عرصے سے اس پروگرام کی تفصیلات عوام اور کانگریس سے چھپائی تھیں۔ اوریگون کے سینس رون وائیڈن اور نیو میکسیکو کے مارٹن ہینرک نے سی آئی اے کے افسران کو ایک خط بھیجا جس میں پروگرام کے بارے میں مزید تفصیلات کو ظاہر کرنے کا مطالبہ کیا گیا۔

خط جس کا بڑا حصہ اپریل 2021 میں بھیجا گیا تھا کو جمعرات کے روز ڈی کلاسیفائی کیا گیا لیکن اس کے جواب میں سی آئی اے کی طرف سے جاری کی گئی دستاویزات کو چھپا دیا گیا۔ وائیڈن اور ہینریک نے کہا کہ یہ پروگرام "قانونی فریم ورک سے باہر ہے جس پر کانگریس اور عوام کا خیال ہے کہ وہ طاقت اسے کنٹرول کرتی ہے۔”

طویل عرصے سے اس بارے میں خدشات پائے جاتے ہیں کہ سی آئی اے مقامی طور پر کونسی معلومات اکٹھی کرتی ہے، اسکی ایک وجہ سی آئی اے کا امریکیوں کی شہری آزادیوں کی خلاف ورزیوں کا سابقہ ریکارڈ بھی ہے۔ سی آئی اے اور نیشنل سیکیورٹی ایجنسی کا مشن غیر ملکی ہے اور انہیں عمومی طور پر وہ امریکیوں یا امریکی کاروباروں کی تفتیش کے مجاز نہیں۔ لیکن جاسوس ایجنسیوں کا غیر ملکی مواصلات کا وسیع ذخیرہ اکثر امریکیوں کے پیغامات اور ڈیٹا کو حادثاتی طور پر پھنسانے کا باعث بنتا ہے۔

سی آئی اے سمیت انٹیلی جنس ایجنسیوں کو امریکی معلومات کے تحفظ کے لیے اقدامات کرنے کی ضرورت ہوتی ہے، بشمول کسی بھی امریکی کے نام کو رپورٹس سے ہٹانا جب تک کہ وہ تحقیقات سے متعلقہ نہ سمجھے جائیں۔ ریڈیکشنز کو ہٹانے کے عمل کو "ان ماسکنگ” کے نام سے جانا جاتا ہے۔

امریکی ایجنسی کی پرائیویسی اور شہری آزادیوں کی افسر کرسٹی سکاٹ نے ایک بیان میں کہا، "سی آئی اے اہم قومی سلامتی مشن کے دوران امریکی افراد کی رازداری اور شہری آزادیوں کا احترام کرنے کی ذمہ داری کو تسلیم کرتی ہے اور اسے بہت سنجیدگی سے لیتی ہے۔ سی آئی اے انٹیلی جنس ذرائع اور طریقوں کی حفاظت کے لیے ذمہ داری سے شفافیت کے لیے پرعزم ہے۔”

سی آئی اے نے پرائیویسی اینڈ سول لبرٹیز اوور سائیٹ بورڈ کے نام سے مشہور ایک نگرانی پینل کے ذریعے ترتیب دی گئی سفارشات کا ایک سلسلہ جاری کیا۔ دستاویز کے مطابق، ایک پاپ اپ باکس پروگرام کا استعمال کرتے ہوئے سی آئی اے کے تجزیہ کاروں کو متنبہ کرتا ہے کہ امریکی شہریوں یا رازداری کے قوانین کے تحت آنے والے افراد کے بارے میں معلومات حاصل کرنے کے لیے ایک غیر ملکی انٹیلی جنس مقصد کی ضرورت ہوتی ہے۔ تاہم بورڈ کے مطابق تجزیہ کاروں کو اپنے سوالات کے جواز کو یاد کرنے کی ضرورت نہیں ہے”۔

دونوں سینیٹرز طویل عرصے سے انٹیلی جنس ایجنسیوں کی مزید شفافیت پر زور دے رہے ہیں۔ تقریباً ایک دہائی قبل، وائیڈن نے جاسوسی سربراہ کے سامنے ایک سوال کیا تھا جس میں این ایس اے کے بڑے پیمانے پر نگرانی کے پروگراموں کے بارے میں اہم انکشافات کیے گئے تھے۔

2013 میں، وائیڈن نے نیشنل انٹیلی جنس کے اس وقت کے ڈائریکٹر جیمز کلیپر سے پوچھا کہ کیا این ایس اے نے "لاکھوں یا کروڑوں امریکیوں پر کسی بھی قسم کا ڈیٹا اکٹھا کیا ہے۔” کلیپر نے شروع میں جواب دیا، "نہیں۔” اس نے بعد میں کہا، "جان بوجھ کر نہیں۔”

سابق سسٹمز ایڈمنسٹریٹر ایڈورڈ سنوڈن نے اسی سال کے آخر میں این ایس اے کی امریکی انٹرنیٹ کمپنیوں کے ذریعے بلک ڈیٹا تک رسائی اور ٹیلی کمیونیکیشن فراہم کرنے والوں کے لاکھوں کال ریکارڈز کا انکشاف کیا۔ ان انکشافات نے دنیا بھر میں تنازعہ کو جنم دیا اور کانگریس میں نئی ​​قانون سازی کی گئی تھی۔

کلیپر نے بعد میں سینیٹ کی انٹیلی جنس کمیٹی کو لکھے گئے خط میں وائیڈن کو دئیے گئے اپنے جواب کو "واضح طور پر غلط” قرار دیتے ہوئے معافی مانگی تھی۔

وائیڈن اور ہینرک کے خط کے مطابق، سی آئی اے کا بلک کلیکشن پروگرام کانگریس کے منظور کردہ اور اصلاح شدہ قوانین کے باہر کام کرتا ہے، اسکے کام کرنے کا دائرہ اختیار ایگزیکٹو آرڈر 12333 کے اختیار کے تحت ہے جو ان دستاویزات سے متعلق ہے جو وسیع پیمانے پر انٹیلی جنس کمیونٹی کی سرگرمیوں کو کنٹرول کرتی ہیں اس ایگزیکٹو آرڈر پر صدر رونالڈ ریگن نے 1981 میں پہلی بار دستخط کیے تھے۔

سینیٹرز نے اپنے بیان میں لکھا کہ "یہ اہم ہے کہ کانگریس سی آئی اے پروگرام کے بارے میں آگاہی کے بغیر قانون سازی نہ کرے، اور یہ کہ امریکی عوام کو یہ یقین دلانے میں گمراہ نہ کیا جائے کہ کسی بھی دوبارہ اجازت دینے والی قانون سازی میں اصلاحات آئی سی کے ان کے ریکارڈ کے ذخیرے کا مکمل احاطہ کرتی ہیں۔”

جمعرات کو سی آئی اے کی طرف سے جاری کردہ اضافی دستاویزات میں اسلامک اسٹیٹ کے خلاف مالیاتی ڈیٹا اکٹھا کرنے کے پروگرام کے بارے میں بھی محدود تفصیلات سامنے آئی ہیں۔ اس پروگرام نے اتفاقی طور پر امریکیوں کے پاس موجود کچھ ریکارڈز کو بھی پھنسا دیا ہے۔

سی آئی اے اور دیگر انٹیلی جنس ایجنسیاں امریکیوں کے ڈیٹا کو رکھنے اور تباہ کرنے سے متعلق رہنما اصولوں کے تابع ہیں۔ انٹیلی جنس سرگرمیوں کو کنٹرول کرنے والے وہ رہنما خطوط اور قوانین وقت کے ساتھ ساتھ گھریلو جاسوسی کے بارے میں پچھلے انکشافات کے جواب میں تیار ہوئے ہیں۔

ایف بی آئی نے امریکی شہری حقوق کی تحریک کی جاسوسی کی اور خفیہ طور پر ڈاکٹر مارٹن لوتھر کنگ کی گفتگو کو ریکارڈ کیا۔ سی آئی اے، نے آپریشن کیوس کے دوران اس بات کی تحقیقات کی کہ آیا ویتنام جنگ کی مخالفت کرنے والی تحریک کا بیرونی ممالک سے تعلق تھا۔

امریکن سول لبرٹیز یونین کے وکیل پیٹرک ٹومی نے ایک بیان میں کہا، "یہ رپورٹس اس قسم کی معلومات کے بارے میں سنجیدہ سوالات اٹھاتی ہیں کہ سی آئی اے کس قسم کی معلومات کو بڑے پیمانے پر حاصل کر رہی ہے اور کس طرح ایجنسی امریکیوں کی جاسوسی کے لیے ان معلومات کا فائدہ اٹھاتی ہے۔ سی آئی اے بغیر کسی عدالتی منظوری کے، اور کانگریس کی طرف سے عائد کردہ چند حفاظتی اقدامات کے بغیر نگرانی کی یہ وسیع سرگرمیاں انجام دیتی ہے۔”

44 thoughts on “سی آئی اے امریکیوں کی جاسوسی میں ملوث

  1. hydroxychloroquine sulfate tabs 200mg plaquenil generic

  2. tadalafil best price uk tadalafil online no prescription

  3. https://sildenafil.pro/# cost of sildenafil 30 tablets

  4. bactrim ds 800-160 tab price of bactrim

  5. https://ciprofloxacin.icu/# buy generic ciprofloxacin

  6. https://pharmacy.ink/# cialis canada online pharmacy

  7. buy cipro online ciprofloxacin order online

  8. https://pharmacy.ink/# reputable indian pharmacies

  9. buy cipro online without prescription cipro online no prescription in the usa

  10. does viagra increase blood pressure does viagra make you last longer

  11. https://tamoxifen.best/# tamoxifen and osteoporosis

  12. https://viagracanada.xyz/# do you need a prescription for viagra

  13. https://viagracanada.xyz/# does viagra make you last longer

  14. what milligrams does viagra come in when is generic viagra available

  15. https://stromectol1st.com/# stromectol how much it cost

  16. stromectol tea tree oil stromectol covid 19

  17. what is the active ingredient in ivermectin does ivermectin kill fungus

  18. new ed treatments new ed pills

  19. doxycycline 200 mg cost doxycycline buy

  20. order amoxicillin no prescription cheap amoxicillin 500mg

  21. where to buy amoxicillin 500mg without prescription order amoxicillin no prescription

  22. buy bactrim online without prescription amoxicillin without a doctors prescription

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔