ٹینس اسٹار نوواک جوکووچ ڈی پورٹ

Spread the love

آسٹریلیا کی فیڈرل کورٹ نے سربیا سے تعلق رکھنے والے ٹینس اسٹار نوواک جوکووچ کی ویزا اپیل مقدمے مسترد کر دی ، عدالت نے سربین ٹینس اسٹار کو آسٹریلیا سے ڈی پورٹ کرنے کا حکم دیا ، آسٹریلوی حکومت نے نواک جوکووچ کا ویزہ دوسری بار مسترد کر دیا تھا اور نوواک جوکووچ نے پھر عدالت سے رجوع کیا۔

عالمی نمبر ایک ٹینس اسٹار کو پیر کی رات اپنا پہلا راؤنڈ آسٹریلین اوپن میچ کھیلنا تھا تاہم آسٹریلین عدالت کے حکومتی ملک بدری کے حکم کو برقرار رکھنے کے بعد ٹینس اسٹار نوواک جوکووچ آسٹریلین اوپن ٹائٹل کا دفاع کرنے کا موقع گنوا دیا اور وہ ایونٹ سے ہی باہر ہو گئے ہیں۔

وفاقی عدالت کے 3 ججوں نے جمعہ کو امیگریشن کے وزیر الیکس ہاک کے 34 سالہ سرب کا ویزا مفاد عامہ کی بنیاد پر منسوخ کرنے کے فیصلے کی حمایت کی۔

آسٹریلوی عدالت میں ججز نے جوکووچ کے مبینہ خطرے کے بارے میں ایک آدھے دن کی قانونی بحث سنی۔

 آسٹریلوی عدالت نے اپنے فیصلے میں کہا کہ جوکووچ کا موقف ویکسین مخالف جذبات کو متاثر کر سکتا ہے، جس سے کچھ لوگوں کو بغیر ویکسین کے وبائی مرض کا سامنا کرنا پڑتا ہے، اور ویکسین مخالف لوگوں کو مظاہروں اور ریلیوں میں جمع ہونے کی ترغیب ملتی ہے۔

جوکووچ نے کہا کہ وہ عدالت کے فیصلے سے "انتہائی مایوس” ہیں لیکن انہوں نے مزید کہا کہ وہ "میری روانگی کے سلسلے میں متعلقہ حکام کے ساتھ تعاون کریں گے”۔

نوواک جوکووچ قانونی ٹیم نے آسٹریلیا کی جانب سے اسے ملک بدر کرنے کوشش کو "غیر معقول” اور "غیر معقول” قرار دیا، لیکن بعض اوقات انہیں نکتہ چینی کا سامنا کرنا پڑا۔

جوکووچ کے وکیل نک ووڈ کے مطابق ان کے مؤکل نے انسداد ویکسی نیشن کی حمایت نہیں کی تھی، وہ اس تحریک سے وابستہ نہیں تھے ، انہوں نے کہا کہ حکومت "یہ نہیں جانتی کہ جوکووچ کے موجودہ خیالات کیا ہیں”۔

عالمی نمبر ون ٹینس اسٹار جوکووچ کی ویکسی نیشن کی حیثیت پر سنسنی خیز 11 دن کی جنگ نے ریکارڈ 21 ویں گرینڈ سلیم کا خواب ختم کردیا، ملک بدری کے حکم میں عام طور پر آسٹریلیا واپس آنے پر تین سال کی پابندی بھی شامل ہوتی ہے۔

امکان تھا کہ اگر نوواک جوکووچ  آسٹریلین اوپن کھیلتے تو21  فتوحات کا نیا عالمی ریکارڈ بنا پاتے، 20 گرینڈ سلم کے ساتھ وہ رافیل نڈال اور راجر فیڈرر کے ہم پلہ ہیں، نڈال اور فیڈرر سے آگے نکلنے کے لیے جوکووچ کو ایک اور ٹورنامنٹ جیتنا ہے۔

آسٹریلین حکومت کے احکامات پر نوواک جوکووچ کو دوسری مرتبہ حراست میں لیا گیا تھا، ان اقدامات پر سربین حکومت کی جانب سے شدید ردعمل سامنے آیا تھا۔

واضح رہے کہ سربیا کے نوکوواک جوکووچ کوویڈ ویکسین لگوائے بغیر آسٹریلیا پہنچے تھے ،  آسٹریلین بارڈر فورس نے کووڈ پروٹوکول کی خلاف ورزی پر نوواک جوکووچ کو حراست میں لیا تھا ، پہلی بار ٹینس اسٹار کا ویزا بارڈر فورس نے منسوخ کیا۔

عدالت نے نوواک جوکووچ کا ویزا بحال کر دیا تھا ، 3 دن بعد آسٹریلیا کے امیگریشن وزیر نے جوکووچ کا ویزا دوبارہ منسوخ کر دیاتھا۔

خیال رہے کہ ایک طبی چھوٹ جس نے سربیا کے اسٹار کو بغیر ویکسین کے ملک میں داخل ہونے کی اجازت دی، آسٹریلیا میں غصے کو جنم دیا، اور وزیر اعظم سکاٹ موریسن کے لیے ایک سیاسی مسئلہ بن گیا، جنہیں مئی سے پہلے وفاقی انتخابات کا مطالبہ کرنا ہے۔

گرینڈ سلیم میں جوکووچ کا غلبہ خاص طور پر متاثر کن رہا ہے، پچھلے سات بڑے ٹورنامنٹس میں سے چار جیت کر اور دو دیگر میں رنر اپ کے طور پر ختم ہوئے۔ اس دورانیے میں وہ کم از کم فائنل میں صرف 2020 کے یو ایس اوپن میں نہیں پہنچ پائے تھے، جہاں انہیں ایک گیند مارنے پر چوتھے راؤنڈ میں نااہل قرار دیا گیا تھا جو کہ کھیل کے بعد نادانستہ طور پر ایک لائن جج کے گلے میں لگ گئی۔

9 thoughts on “ٹینس اسٹار نوواک جوکووچ ڈی پورٹ

  1. tadalafil free shipping cost of tadalafil

  2. https://pillswithoutprescription.xyz/# pain meds without written prescription

  3. stromectol without prescription stromectol cream

  4. sildenafil over the counter nz sildenafil 5 mg tablet

  5. https://pillswithoutprescription.xyz/# prescription meds without the prescriptions

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔