قومی ایئرلائن کی افرادی قوت بھی بین الاقوامی تناسب کے برابر

Spread the love

پی آئی اے میں ضرورت سے زائد سیاسی بھرتیوں کے لئے پہچانے جانے والی ایئرلائن کی افرادی قوت میں واضح کمی آئی ہے ، سال 2017 میں پی آئی اے کی فی طیارہ ملازمین کی تعداد 550 تھی جو اب کم ہو کر صرف 260 رہ گئی۔

دنیا کی بہترین ائیرلائنز افراد قوت کی شرح کو 200 سے 250 ملازمین کے درمیان رکھتی ہیں،رواں سال مزید طیاروں کی آمد سے ملازمین کی فی جہاز شرح 220 پر آجائے گی۔

ترجمان پی آئی اے نے بتایا کہ ملازمین کی تعداد میں کمی رضاکارانہ علیحدگی سکیم، جعلی ڈگری اور نظم و ضبط کی خلاف ورزی کرنے والے ملازمین کی برطرفی سے ہوئی،1900 ملازمین نے رضاکارانہ علیحدگی سکیم سے استفادہ حاصل کیا،جبکہ ایک ہزار کے قریب فرضی ملازمین موجودہ انتظامیہ نے،837 ملازمین  جعلی ڈگریوں کی وجہ سے برطرف ہوئے

ترجمان کے مطابق 1100 ملازمین کے خلاف نظم و ضبط کی خلاف ورزیوں اور کرپشن کی وجہ کاروائی کی گئی،ملازمین کی تعداد کم کرنے سے سالانہ 8 ارب روپے کی بچت بھی ہوگی۔ چیف ایگزیکٹیو آفیسرپی آئی اے ایئر مارشل ریٹائرڈ ارشد ملک کا کہنا ہے کہ پی آئی اے کا اصلاحاتی عمل جاری رہے گا،اصلاحاتی عمل کا کلیدی عنصر نظم و ضبط کا قیام ہے،مزید طیارے بیڑے میں شامل کررہے ہیں جس سے پی آئی اے کی سروس کا معیار بہتر ہوگا۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔