ریحام خان کی گاڑی کو روکنے کی کوشش، سیکرٹری کی درخواست پر مقدمہ درج

TWITTER IMAGE
Spread the love

اسلام آباد کے تھانہ شمس کالونی میں وزیراعظم عمران خان کی سابقہ اہلیہ ریحام خان کے پرسنل سیکریٹری نے درخواست پر مقدمہ درج کر لیا گیا ہے۔

مدعی بلال عظمت کے مطابق گزشتہ رات راولپنڈی سے اسلام آباد آتے ہوئے دو مسلح موٹر سائیکل سواروں نے اُن کی گاڑی کو دوبار روک کر گاڑی سے اتارنے کی کوشش کی، وہ گزشتہ روز تمام وقت ریحام خان کے استعمال میں رہی، لیکن جب واقعہ پیش آیا، اس وقت گاڑی کو روکنے اور حراساں کرنے کی کوشش کے ذریعے ریحام خان کو ڈرانے کی کوشش کی گئی ،پولیس نے ملزمان کی تلاش شروع کر دی ہے۔

پولیس حکام کے مطابق ریحام خان گاڑی میں موجود نہیں تھیں،ڈرائیور اور پرسنل سیکرٹری انہیں اسلام آباد چھوڑ کر راولپنڈی جا رہے تھے ، اس دوران کچہ سٹاپ کے قریب واقعہ پیش آیا۔

ایف آئی آر کے مطابق واقعہ اسلام آباد اور راولپنڈی کے درمیان آئی جے پرنسپل روڈ پر پیش آیا اور موٹر سائیکل سوار افراد ان کا تعاقب کرتے ہوئے دو مرتبہ روکنے کے لیے بڑھے اور ان کو گاڑی سے اتارنے کی کوشش کی۔

مقدمے کے مدعی بلال عظمت کے مطابق مذکورہ گاڑی پورا دن ریحام خان کے استعمال میں رہی اور واقعہ سے کچھ دیر قبل ہی انہوں نے گاڑی تبدیل کی تھی۔

ایف آئی آر میں لکھوایا گیا ہے کہ ملزمان کی عمریں 25 سے 30 برس کے درمیان تھیں، درخواست کے متن میں کہا گیا ہے کہ مدعی کی کسی سے کوئی دشمنی نہیں اور گمان یہی ہے کہ ان کو ڈرا کر ریحام خان کو پیغام دینے کی کوشش کی گئی ہے۔

ریحام خان نے ٹوئٹ میں بتایا کہ وہ ایک شادی میں شرکت کے بعد واپس آئیں اور کچھ دیر پہلے ہی گاڑی تبدیل کی تھی جس کے بعد آئی جے پی روڈ پر اُن کے ڈرائیور اور سیکریٹری کے ساتھ یہ واقعہ پیش آیا۔

انہوں نے سوال پوچھا کہ ”کیا یہی عمران خان کا نیا پاکستان ہے؟ بزدلوں، ٹھگوں اور لالچیوں کی ریاست پر خوش آمدید۔“

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔